سرکاری ملازمین کے سوشل میڈیا استعمال پر پابندی عائد

وزیراعظم کی ہدایت پرآفس میمورنڈم جاری ،خلاف ورزی پرتادیبی کارروائی ہوگی

اسلام آباد (خصوصی نیوز رپورٹر، نیوز رپورٹر) وفاقی حکومت نے سرکاری ملازمین کے سوشل میڈیا کے استعمال پر پابندی عائد کردی ۔ وزیراعظم کی ہدایت پراسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے آفس میمورنڈم جاری کردیا۔ فیس بک، ٹویٹر، واٹس ایپ اور انسٹاگرام استعمال نہیں کرسکیں گے ۔میمورنڈم کے مطابق سرکاری ملازمین کو گورنمنٹ سرونٹس رولز 1964ء کی پاسداری کا حکم دیا گیا ہے ، جو سرکاری ملازم کو کسی بھی بیان بازی یا رائے دینے سے روکتا ہے ۔ میمورنڈم میں لکھا گیا ہے کہ ملازمین کے بیان یا رائے زنی سے حکومت کی بدنامی کا خطرہ ہوسکتا ہے ۔ ان رولز کا رُول 18 سرکاری ملازم کو کسی دوسرے سرکاری ملازم یا کسی شخص یا میڈیا سے سرکاری معلومات یا دستاویز شیئر کرنے سے روکتا ہے ۔ ہدایات کا مقصد کسی حکومتی ادارے کی جانب سے سوشل میڈیا کے تعمیری اور مثبت استعمال کی حوصلہ شکنی نہیں، حکومتی پالیسی، سروس ڈ لیوری میں بہتری کیلئے شہریوں سے تجاویز اور ان کی شکایات کے حل کیلئے رائے طلب کی جاسکتی ہے ، لیکن ایسے ادارے اپنے سوشل میڈیا پیجز پر قابل اعتراض ریمارکس کو بروقت ہٹانے کے پابند ہوں گے ۔ تمام سرکاری ملازمین کو خبردار کیا گیا ہے کہ کسی ایک یا زائد ہدایات کی خلاف ورزی بددیانتی کے مترادف ہوگی اور غفلت برتنے والے ایسے سرکاری ملازم کے خلاف سول سرونٹس رولز 2020ء کے تحت تادیبی کارروائی کی جائے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے