پنجاب میں قومی پروگرام کے تحت پیداواری مقابلہ برائے کنولا کیلئے 20جنوری تک درخواستیں طلب

وزیراعظم کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت وزیر اعلی پنجاب کی زیر قیادت زرعی ترقی کیلئے 300ارب روپے کے تاریخی منصوبوں پر عمل درآمد جاری ہے جبکہ اس پیکیج کے تحت پنجاب میں پانچ ارب گیارہ کروڑ روپے سے تیلدار اجناس کی کاشت کے فروغ کے قومی پروگرام کے تحت پیداواری مقابلہ برائے کنولا 22 ۔ 2021  کیلئے رجسٹرڈ کاشتکاروں سے درخواستیں طلب کر لی گئی ہیں۔محکمہ زراعت توسیع فیصل آباد کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر خالداقبال نے اے پی پی کو بتایا کہ اس پیداواری مقابلہ کیلئے فیصل آباد جھنگ،ٹوبہ ٹیک سنگھ سمیت بہاولنگر،بہاولپور،بھکر،قصور،خانیوال،لودھراں،میانوالی، ملتان، مظفرگڑھ،اوکاڑہ اور وہاڑی کے اضلاع سے 20جنوری تک درخواستیں وصول کی جائیں گی۔

انہوں نے بتایا کہ ان پیداواری مقابلہ جات میں تین یا تین سے زائد قابل کاشت زرعی اراضی کے مالک مرد و خواتین درخواست دینے کے اہل ہوں گے جبکہ مشترکہ کھاتہ رکھنے والے کاشتکار بھی اہل ہیں نیز مزاران،ٹھیکیدار بھی دستاویزات تحصیل کمیٹی سے تصدیق کروانے کے بعد درخواست دے سکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس پیداواری مقابلہ میں حصہ لینے والے کینولا کے کاشتکار تین ایکڑ متصل فصل کینولا جس میں کوئی بھی منظور و تصدیق شدہ کاشت کی گئی ہو مقابلہ کیلئے پیش کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مقابلہ میں حصہ لینے کیلئے شرائط فارم پر درج ہیں جو متعلقہ ڈپٹی ڈائریکٹرکے دفاتر سے مفت حاصل کئے جاسکتے ہیں جبکہ کاشت کار درخواستیں اپنے ضلع کے متعلقہ ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت توسیع کے دفتر میں جمع کرائیں گے۔انہوں نے بتایاکہ درخواست فارم محکمہ زراعت کی ویب سائٹ www.agripunjab.gov.pkسے بھی ڈاؤن لوڈکئے جاسکتے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ گریڈ 17 اور اوپر کے سرکاری ملازمین درخواست دینے کے اہل نہ ہوں گے۔ انہوں نے بتایا کہ اس پروگرام کے تحت صوبائی سطح پر بھی پیداواری مقابلہ جات منعقد ہوں گے اور صوبائی کمیٹی کا فیصلہ حتمی ہوگا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے