ماحولیاتی تبدیلی سے مینڈک اچھلنے کی صلاحیت کھونے لگے

بعض اقسام کے مینڈکوں میں اگر پانی کی شدید قلت واقع ہوجائے تو ان میں چھلانگ لگانے کی صلاحیت کم ہوتے ہوتے بالکل ختم بھی ہوسکتی ہے

کینیڈا(نیٹ نیوز)ماہرین نے ثابت کیا ہے کہ اگر عالمی تپش، بدلتے موسم یا کسی اور وجہ سے مینڈکوں میں پانی کی کمی ہوجاتی ہے تو وہ جست بھرنے کے قابل نہیں رہتے ۔کینیڈا میں سائمن فریزر یونیورسٹی کے ڈین گرینبرگ اور ان کے ساتھیوں نے تین اقسام کے مینڈکوں پر تجربات کئے ہیں۔ تحقیق سے معلوم ہوا کہ جیسے جیسے مینڈکوں کے جسم میں پانی کی کمی ہوئی، ویسے ویسے ان میں جست بھرنے کا فاصلہ کم ہوتا چلا گیا۔ جب مینڈکوں کے جسم میں پانی کی کمی 30 فیصد تک کم ہوگئی تو 45 فیصد مینڈک اچھلنا ہی بھول گئے ۔ اگر ماحول کا درجہ حرارت بھی 15 سے 30 درجے سینٹی گریڈ تک بڑھایا جائے تو اس ان کی چھلانگ کا فاصلہ کم سے کم تر ہوتا چلاجاتا ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے