سرکاری ملازمین کا پارلیمنٹ کے باہردھرنا ختم جبکہ احتجاج جاری رہیگا

ملک بھر سے آئے ہوئے ہزاروں سرکاری ملازمین نے پارلیمنٹ کے باہر دھرنا دیا

اسلام آباد(اپنے رپورٹرسے ،سٹی رپورٹر) حکومتی نمائندوں سے مذاکرات کے بعد ملازمین نے دھرنا ختم کرنے کا اعلان کر دیا جبکہ احتجاج جاری رہے گا، وفاقی دارالحکومت سے ورکر کمیٹی کے ممبر رحمان باجوہ نے کہا کہ ہم دھرنا ختم نہیں کر رہے جب تک ہمارے الائونسز اور فنڈز کا مسئلہ ختم نہیں ہوتا ہم احتجاج جاری رکھیں گے ۔ ہم آج احتجاج کیو بلاک سیکر ٹریٹ میں جاری رکھیں گے ، حکومتی نمائندوں اور آل پاکستان ایمپلائز اینڈ ورکرز گرینڈالائنس کے مابین دوگھنٹے تک مذاکرات جاری رہے جو کامیاب نہ ہوسکے ۔مظاہرین نے مطالبات کی منظوری تک احتجاج جاری رکھنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا آج دیگرتنظیموں کے ساتھ مل کر احتجاج کیاجائے گا ،شرکا کاموقف تھا کہ حکومت ہمیں یقین دہانی کرائے کہ مطالبات کوتسلیم کیا جائے گا ،ریٹائرمنٹ کی عمر کم اورسالانہ انکریمنٹ کو ختم نہ کیا جائے ،تنخواہوں اور پنشن میں اضافہ کیا جائے ، قبل ازیں مظاہرین نے جب پارلیمنٹ ہائوس کی جانب مارچ شرو ع کیا تو ڈی چوک کے قریب پولیس نے روکنے کی کوشش کی جس کے نتیجہ میں پولیس اور ملازمین کے مابین دھکم پیل ہوئی۔ مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے پولیس نے واٹرکینن کااستعمال کیا تاہم مظاہرین نے رکاوٹیں عبور کرتے ہوئے پارلیمنٹ ہائوس کے سامنے پہنچ کر دھرنادے دیا اور مطالبات کی منظوری کیلئے نعرے بازی کی ۔

(لائیوسٹاک پاکستان) سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے کی امید پیدا ہوگئی،مذاکرات کامیاب ہونے کے بعد پارلیمنٹ ہاوس کے سامنے سرکاری ملازمین کی جانب سے دیا جانے والادھرنا ختم، وفاقی وزیر علی محمد خان نے تنخواہوں میں اضافے کیلئے وزیراعظم سے بات کرنے کی یقین دہانی کروا دی۔ تفصیلات کے مطابق ملک بھر کے سرکاری ملازمین کی جانب سے پارلیمنٹ ہاوس کے سامنے دیے جانے والا دھرنا ختم کر دیا گیا ہے۔ دھرنا منتظمین اور حکومتی افراد کے درمیان مذاکرات کامیاب ہونے کے بعد دھرنا ختم کرنے کا اعلان کیا گیا۔ حکومت کی جانب سے علی محمد خان نے وفد کی قیادت کرتے ہوئے دھرنے کے شرکاء کو یقین دہانی کروائی کہ تنخواہوں میں اضافے کیلئے وزیراعظم سے بات کی جائے گی۔

علی محمد خان کی یقین دہانی کے بعد سرکاری ملازمین نے دھرنا ختم کر دیا۔ واضح رہے کہ منگل کے روز پارلیمنٹ ہائوس کے سامنے ملک بھر سے آنے والے سرکاری ملازمین کا تنخواہوں میں اضافے اور ملک میں شدید مہنگائی کے خلاف احتجاجی دھرنا دیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے