دل کا دورہ پڑنے سے قبل مردوں میں 80 فیصد یکساں علامات ظاہر ہونے کا انکشاف

ڈیلاس: دل کے دوروں کے متعلق خیال کیا جاتا ہے کہ یہ اچانک پیش آتے ہیں لیکن ایسا کبھی کبھار ہی ہوتا ہے۔ حقیقت میں ایسی کئی علامات ہم میں ظاہر ہو رہی ہوتی ہیں جن کے متعلق ہمیں علم نہیں لیکن وہ خطرے کی گھنٹی بجا رہی ہوتی ہیں۔

امریکی ریاست ٹیکساس کے شہر ڈیلاس میں منعقد ہونے والی امیریکن ہارٹ ایسوسی ایشن کی میٹنگ میں پیش کی جانے والی تحقیق میں وہ عام علامات بتائی گئیں جو آگے چل کر مردوں میں دل کے دورے کا سبب بنتی ہیں۔

تحقیق میں 35 سے 65 سال کے درمیان 567 مردوں کا مطالعہ کر کے دل کے دوروں کا سبب بنی والی علامات کو واضح کیا گیا۔

مطالعے کے مطابق تقریباً 80 فی صد مخصوص علامات اچانک دل کا دورہ پڑنے کے چار ہفتے سے ایک گھنٹے قبل کے درمیان سامنے آئیں۔

جن افراد میں علامات ظاہر ہوئیں ان میں 56 فی صد کی چھاتی میں درد ہوا، 13 فی صد کا دم گھٹنے لگا، چار فی صد افراد کو چکر آنے یا دل کی دھڑکن میں اونچ نیچ کی علامات کا سامنا تھا۔

تحقیق میں یہ بھی بتایا گیا کہ 53 فی صد لوگوں میں دل کے دورے سے قبل علامات موجود تھیں۔