محکمہ زراعت پنجاب نے بارش یا آندھی کے دوران ربیع کی فصلات کی بہتر سنبھال بارے حکمت عملی جاری کردی

ترجمان محکمہ زراعت پنجاب نے کہا ہے کہ کاشتکار اپنی فصلات کی دیکھ بھال،سنبھال کے لئے ریڈیو اور ٹیلی ویژن سے نشر ہونے والے موسمی پیغامات کو توجہ سے سنیں اور اگر بارش یا آندھی کا خطرہ ہو تو گندم کی کٹائی روک دیں اور کٹی ہوئی گندم کو ترپال یا شیٹ لے کر ڈھانپ دیں۔ بارش رکنے کے بعد گیلی گندم کو چبوترے پر ڈال کر دھوپ لگوائیں،امسال بارش معمول سے زیادہ ہوئی ہیں ،نیز درجہ حرارت بھی کم رہا ہے اس لئے کاشتکار گندم کی کٹائی فصل کے پوری طرح پکنے پر شروع کریں،کاشتکار گندم کی کٹائی کے بعد بھریاں قدرے چھوٹی باندھیں اور سٹوں کا رٴْخ اوپر کی طرف رکھیں،کھلواڑے چھوٹے رکھیں اور اونچے کھیتوں میں کھلیان لگائیں اور پانی کی نکاسی کیلئے اردگرد کھالی بنائیں۔

ترجمان نے بتایا کہ گندم کی کٹائی کیلئے سب سے بہترین مشین کمبائن ہارویسٹر یا ریپر ہے جس کے استعمال سے کافی حد تک پیداوار کے ہونے والے نقصان کو کم کیا جا سکتا ہے اور فصل بھی زیادہ دیر کھیت میں نہیں پڑی رہتی۔ ترجمان نے بتایا کہ مکئی کے کاشتکار بھی اپنے کھیتوں سے بارش کا پانی ساتھ موجود خالی کھیت میں منتقل کریں تاکہ مرطوب موسم کے باعث مکئی کے پودے مرنے سے محفوظ رہیں ،نیز مرطوب موسم میں مکئی کے پودوں پر کیڑے مکوڑوں اور بیماریوں کا خطرہ بھی موجود ہوتا ہے اس لئے کاشتکار محکمہ زراعت کے مقامی عملے کے مشورہ سے انتظامات کریں، چارہ کی فصلات سے بھی پانی خالی کھیتوں میں یا فصل کے اردگرد کھائی کھود کر زائد پانی کو اس کھائی میں منتقل کر دیں۔ چارہ کی فصل پانی کی زیادتی کو برداشت کر لیتی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے