کر پٹ، نااہل ملازمین کو ریٹائر کرنے کا عمل روک دیا گیا

اسلام آباد (لائیوسٹاک پاکستان) وفاقی حکومت نے بیوروکریسی میں اصلاحات اور کرپٹ و نااہل ملازمین کو 20 سال ملازمت پر ریٹائر کرنے کیلئے سابق حکومت کے منظور کر دہ ڈائر یکٹری ریٹائر منٹ قانون کا از سر نو جائزہ لینے کا فیصلہ کیا ہے ۔

اسٹیبلشمنٹ ڈویزن نے وزیراعظم شہباز شریف کے فیصلے تک مذکورہ قانون کے تحت سابق حکومت کی جانب سے 92افسروں اور ملازمین کو ریٹائر کرنے کا عمل روک دیا۔ وزیراعظم شہباز شریف ڈائر یکٹری ریٹائر منٹ قانون کے تحت 20 سال سروس کے حامل گریڈ 1 تا 21 کے افسروں کو ریٹائر کرنے کا قانون بر قرار رکھنے یا ختم کر نے کا فیصلہ کریں گے۔ اسٹیبلشمنٹ ڈویزن نے 92 ملازمین کو ریٹائر کرنے کے نوٹس جاری کر رکھے ہیں۔ اسٹیبلشمنٹ ڈویزن نے تمام نو ٹسز پر کارروائی روک دی ہے اور تا حال کسی کو ریٹائر کرنے کیلئے احکامات جاری نہیں کیے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے