سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے سے متعلق بڑی خبر

(لائیوسٹاک پاکستان) حکومت کا سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں آئندہ کابینہ میں منظوری دینے کا دعویٰ، آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن کی صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت سے ملاقات اپنے اعلامیے میں کہا کہ وزیر قانون نے سرکاری ملازمین کو تنخواہوں میں اضافے کی خوشخبری سنادی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب کے سرکاری ملازمین کا حکومت پنجاب سے مطالبہ ہے کہ وفاق کی طرز پر ان کی تنخواہوں میں بجٹ سے قبل 25 فیصد اضافہ کیا جائے،اس حوالے سے ایک بار پھر سب کمیٹی کا اجلاس ایڈیشنل چیف سیکریٹری ارم بخاری کی سربراہی میں ہوا۔ اجلاس میں ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس کے بعد ملازمین اتحاد تنظیموں نے راجا بشارت سے ملاقات کی۔

ایپکا کے اعلامیے کے مطابق وزیر قانون نے آئندہ کابینہ کے اجلاس میں تنخواہوں میں اضافے کی یقین دہانی کرا دی ہے۔صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت سے ہونے والے ملاقات میں مرکزی جنرل سیکریٹری ایپکا خالد جاوید سنگھیڑہ اور پنجاب کے صدر حاجی ظفر علی خان سمیت دیگر موجود تھے۔

اس سے قبل صدر ایپکا ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ عارف حسین جٹ نے دھمکی دی کہ حکومت نے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 25 فیصد اضافہ کا نوٹیفکیشن آج نہ جاری نہ کیا تو منگل کے روز سول سیکرٹریٹ کے باہر ہونیوالے احتجاجی دھرنے میں بھرپور شرکت کریں گے۔ انہوں نےتمام ٹیچنگ و نان ٹیچنگ سٹاف سے دھرنے میں شرکت کی اپیل کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ تنخواہوں میں اضافہ کیلئے احتجاج مطالبات کی منظوری تک جاری رکھا جائے گا۔

واضح رہےکہ کچھ روز قبل پنجاب حکومت نے گریڈ ایک سے انیس کی تنخواہوں میں اضافے کا فیصلہ نئے بجٹ تک مؤخر کردیا تھا۔ ذرائع کا کہنا تھا  کہ گریڈ ایک سے گریڈ 19 کے افسران کیساتھ ساتھ گریڈ بیس سے بائیس کے افسران کو بھی اضافی تنخواہوں سے نوازنے کیلئے ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نئے بجٹ سے مشروط کردیا.  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے