ویٹرنری ہسپتال میں عملہ تعینات کیا جائے:مویشی پال

 ٹبہ سلطان پور ( لائیوسٹاک پاکستان) جانوروں کو حفاظتی ٹیکے نہ لگنے کے غریب مویشی پال کاشتکاروں کے لاکھوں روپے مالیت کے دودھ دینے والے جانور ہلاک ہورہے ہیں اگر اسی طرح سلسلہ چلتا رھاتوملک میں دودھ اور گوشت کا بحران بھی پیدا ہو سکتا ہے ان خیالات کا اظہار گزشتہ روز سروے کے دوران مویشی پال کا شتکاروں نے شکایات کے انبار لگادیئے موضع ساندہ کے   کاشتکار حاجی عبدالغفار خان پاندہ ٗ چوھدری حاجی مہندی حسن کمبوہ ٗ کا شتکار چودھری حاجی رحمت اللہ کمبوہ نے کہا کہ محکمہ حیوانات چک 202 میں عملہ نہ ہونے کی وجہ سے ہسپتال ویران بھوت بنگلہ بن چکا ھے اور نشیوں نے ڈیرے جمائے ھوئے ہیں زمیندار حاجی شاکر نے محکمہ لائیو سٹاک کے ہسپتال میں عملہ تعینات کیا جائے۔ زمیندار چوھدری عبدالرشید پپو گجر نے کہاکہ چک 202کے حیوانات کے ہسپتال میں عملہ اور ادویات فراہم کی جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے