محکمہ موسمیات نے ملک میں خشک سالی اور زراعت و لائیوسٹاک متاثر ہونے کا خدشہ ظاہر کر دیا

 کوئٹہ /  پشاور: موسم سرما میں کم بارشوں کے سبب ملک کے مختلف علاقوں میں خشک سالی کا خدشہ ہوسکتا ہے۔

محکمہ موسمیات نے خشک سالی ایڈوائزری جاری کردی جس کے مطابق گذشتہ اکتوبرسے جنوری کے دوران ملک میں معمول سے 31 فیصد کم بارشیں ہوئیں، موسم سرما میں کم بارشوں کے سبب وسطی وجنوبی بلوچستان کے اضلاع میں خشک سالی کی صورتحال پیدا ہوسکتی ہے جبکہ بلوچستان کے اکثرعلاقوں میں درمیانے درجے کی خشک سالی کا امکان ہے۔ خشک سالی کے سبب متعلقہ اضلاع میں زراعت و لائیواسٹاک متاثرہوسکتی ہے، کاشت کارعلاقوں میں ربیع کی فصل کیلئے پانی کی کمی کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

ایڈوائزری کے مطابق بلوچستان میں معمول سے 73.2 فیصد ، سندھ میں72.2 فیصد جبکہ خیبرپختونخوا میں 12.9 فیصد کم بارشیں ریکارڈ کی گئی تاہم پنجاب میں معمول سے 9.8 فیصد، گلگت بلتستان وکشمیرمیں 4.3 فیصد زیادہ بارشیں ہوئیں۔

ایڈوائزری میں کہا گیا ہے کہ بلوچستان کے چاغی، گوادر، ہرنائی، کیچ، خاران، مستونگ، نوشکی، پنجگور، قلات، کوئٹہ و واشک میں درمیانے درجے کی خشک سالی کا امکان ہے۔

ایڈوائزری کے مطابق سندھ جنوب مشرقی حصوں میں بھی کم درجے کی خشک سالی کا خدشہ ہے۔ ایڈوائزری میں سٹیک ہولڈرز کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ خشک سالی سے نمٹنے کیلئے قبل از وقت اقدامات کئے جائے جبکہ محکمہ موسمیات سے موسم کی صورتحال پرخود کو اپڈیٹ رکھے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے