اگلے سال گندم کی امدادی قیمت22سوروپے من

متعلقہ سٹیک ہولڈرز سے مشاورت کے بعد تجویز کو ای سی سی بھجوایا جائے گا

اسلام آباد(نامہ نگار)اگلے سال گندم کی امدادی قیمت 2200 روپے فی من مقرر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کا مقصد گندم کی کاشت کے رقبے میں اضافہ کرکے پیداوار کو بڑھانا ہے ۔ ذرائع کے مطابق وزارت نیشنل فوڈ سکیورٹی ملک میں گندم کی بڑھتی ہوئی مانگ کو پورا کرنے کیلئے کسانوں کو سبسڈائز بیج فراہم کرنے جارہی ہے ۔ ذرائع نے بتایا موجودہ حکومت نے گزشتہ سال گندم کی امدادی قیمت 1400 روپے فی من سے بڑھا کر 1800 روپے فی من مقرر کردی تھی جس کے بہت اچھے نتائج سامنے آئے ہیں۔ اب اگلے سال میں گندم کی کم ازکم امدادی قیمت 2200 روپے فی من مقرر کرنے کی تجویز پر کام شروع کردیا گیا۔ اگر بروقت امدادی قیمت کا اعلان کردیا جاتا ہے تو کاشتکار دوسری فصل لگانے کی بجائے گندم کی کاشت کو ترجیح دیں گے کیونکہ ملک کے بعض علاقوں میں گندم کی بوائی کا سیزن شروع ہوچکا ہے ، گندم کا نیا سیزن شروع ہونے سے قبل ہی امدادی قیمت کو طے کرنا ہوتا ہے ۔ وزارت نیشنل فوڈ سکیورٹی کا کہنا ہے کہ اگلے سال گندم کی کم ازکم امدادی قیمت 2200 روپے فی من کرنے کی تجویز پر کام شروع کردیا گیا ہے اور متعلقہ سٹیک ہولڈرز سے مشاورت کی جائے گی تاہم اس تجویز کو ای سی سی کو بھجوایا جائے گا جس کے بعد ہی حتمی فیصلہ ہوگا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے