عالمی ادارہ صحت کے وفد کا محکمہ لائیوسٹاک کی صوبائی تشخیصی لیبارٹری لاہور کا دورہ

لاہور(لائیوسٹاک ٌپاکستان) عالمی ادارہ صحت کے اعلیٰ سطحی وفد نے لاہور میں محکمہ لائیو سٹاک کی صوبائی تشخیصی لیبارٹری کا دورہ کیا۔ وفد میں ڈاکٹر الزبتھ ٹیلر اور ڈاکٹر جان ووڈ فورڈ سمیت وزارت نیشنل فوڈ سکیورٹی، نیشنل ویٹرنری لیبارٹری اور اینیمل قرنطینہ ڈیپارٹمنٹ اور نیشنل انسٹیٹیوٹ آف ہیلتھ اسلام آباد کے عہدیداران شامل تھے۔ وفد نے سیکرٹری لائیو سٹاک پنجاب محمد مسعود انور سے ملاقات بھی کی۔ حکام نے گلوبل ہیلتھ سکیورٹی ایجنڈا اور اینٹی مائیکروبئیل مزاحمت بارے کوششوں کا جائزہ لیا۔ ڈائریکٹر جنرل (ریسرچ) ڈاکٹر سجاد حسین نے مشن کو ہیلتھ سکیورٹی ایجنڈے کی جانب پیش رفت بارے آگاہ کیا۔

شرکاءکو محکمانہ ڈیزیز سرویلنس اور رپورٹنگ سسٹم ADRS-info بارے میں بھی تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اس موقع پر عالمی ادارہ صحت کے نمائندگان کا کہنا تھا کہ بیماریوں کے مو¿ثر علاج کے لیے اینٹی بائیوٹکس کا مناسب استعمال ضروری ہے تاکہ اینٹی مائکروبائیل مزاحمت سے بچا جاسکے۔ انہوں نے محکمانہ ڈیزیز سرویلنس سسٹم اور اینٹی مائیکروبئیل مزاحمت میں کمی بارے کوششوں کو سراہا۔ سیکرٹری لائیو سٹاک پنجاب محمد مسعود انور کا کہنا تھا کہ گلوبل ہیلتھ سکیورٹی ایجنڈا کے اہداف پورے کرنے کیلئے ڈیزیز سرویلنس، رپورٹنگ، تشخیص اور ریسرچ کے دائرہ کار کو بڑھانا ہوگا نیز عالمی ادارہ صحت کی سفارشات لائیو سٹاک سیکٹر میں اصلاحات میں اہم کردار ادا کریں گی۔ اجلاس میں ایڈیشنل سیکرٹری (ٹیکنیکل) ڈاکٹر آصف سلیمان ساہی، ڈائریکٹر اینیمل ڈیزیز سرویلنس ڈاکٹر اعظم علی ناصر اور ڈیزیز انویسٹیگیشن و کنٹرول آفیسر لاہور ڈاکٹر حلیمہ سعدیہ نے بھی شرکت کی۔