افسروں کو جبری ریٹائرکر نے کیلئے فہرستیں بننا شروع

اعلی ٰ افسروں میں ایک خوف کی فضا ،بڑے پیمانے پر افسر ریٹائر ہو جائیں گے پسند ناپسند کی بنیاد پر فیصلے ہونگے ، اچھے لوگ بھرتی ہونگے ، افسروں کا ردعمل

لاہور (مدثرحسین سے )کرپٹ اور رشوت خور افسروں کو جبری ریٹائر کرنے کے لیے فہرستیں بننا شروع ہو گئیں ۔ محکموں کے بڑے پیمانے پر افسر زد میں آئیں گے ۔ نئے قانون کے تحت جس افسر کی اے سی آر ز رپورٹ پر اسکا اعلیٰ افسر دو بار منفی ریمارکس دے چکا ہو گا اس کو جبری ریٹائر کر دیا جائے گا ۔کرپٹ اور رشوت خور وہ افسر جن کی سروس 20سال ہو گئی اسکو ریٹائرکر دیا جائے گا ۔ ذرائع کے مطابق اس قانو ن کے بعد اعلی ٰ افسروں میں ایک خوف کی فضا پائی جا رہی ہے اس نئے قانون کے تحت پنجاب سمیت دیگر صوبوں میں بڑے پیمانے پر افسر ریٹائر ہوں گے اور ان افسروں کی خالی سیٹوں پر پروموشنز کی جائیں گی اور نئے افسروں کو بھرتی کیا جائے گا ۔ ذرائع کے مطابق بعض افسر اس قانون کو ختم کروانے کی کوشش بھی کر رہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق نئے قانون کے تحت ن لیگ سے منسلک افسروں کو جبری ریٹائر کیا جائے گا ۔ اس حوالے سے ایک اعلیٰ پولیس ٖافسر نے روز نامہ دنیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتا یا کہ اس قانون سے پسند اور ناپسند ہو گی بہت سے اچھے افسر پسند اور ناپسند کی زد میں آکر ریٹائر ہو جائیں گے ۔ جبکہ کچھ افسر اس قانون کی حمایت میں بھی نظر آتے ہیں انکا کہنا ہے کہ اگر شفاف طریقے سے لسٹیں بنائی گئیں تو اس سے محکموں سے کرپٹ افسروں کا خاتمہ ہو جائے گا اور انکی جگہ اچھے افسر وں کو بھرتی کیا جائے گا جو ملک اور محکمے کی بہتری کے لیے کام کریں گے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے