محکمہ لائیوسٹاک پنجاب میں ورچوئل گورننس 9211 سسٹم کا نئی جدت سے نافذ کرنے بارے افتتاحی تقریب

پنجاب انفارمیشن اینڈ ٹیکنالوجی بورڈ اور محکمہ لائیوسٹاک کے مابین 9211سسٹم کو آپریشنل کرنے کے معاہدے پر دستخط بھی کئے گئے،تقریب میں سیکرٹری لائیوسٹاک اسد رحمان گیلانی اور چیئرمین پی آئی ٹی بی اظفر رحمان سمیت ایڈیشنل سیکرٹریز، ڈائریکٹر جنرلز اور ڈائریکٹرز نے بھی شرکت کی

لاہور( نمائندہ خصوصی) لائیوسٹاک سیکٹر میں قابل اعتماد ڈیٹا کے حصول اور فیلڈ مانیٹرنگ کے لئے 9211 ورچوئل گورننس سسٹم کلیدی اہمیت کا حامل ثابت ہو گا۔ یہ بات وزیر برائے لائیوسٹاک سردار حسنین بہادر دریشک نے کہی۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ لائیو سٹاک پنجاب میں 9211 ورچوئل گورننس سسٹم کو نئی جدت سے نافذ کرنے بارے افتتاحی تقریب کا انعقاد کیا گیاجس کے دوران پنجاب انفارمیشن اینڈ ٹیکنالوجی بورڈ اور محکمہ لائیوسٹاک کے مابین 9211سسٹم کو آپریشنل کرنے کے معاہدے پر دستخط بھی کئے گئے۔ اس تقریب کے مہمان خصوصی صوبائی وزیر لائیوسٹاک سردار حسنین بہادر دریشک اور صوبائی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی راجہ یاسر ہمایوں تھے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر لائیوسٹاک کا کہنا تھا کہ ورچوئل گورننس سسٹم سے نہ صرف مویشی پال حضرات بلکہ ملک کی مجموعی معیشت میں خاطر خواہ اضافہ ممکن ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ سسٹم دیگر محکموں اور صوبوں کے لئے مشعل راہ کی حیثیت رکھتا ہے جس کی بدولت فیلڈ مانیٹرنگ، خدمات کی فراہمی اور فارمر فیڈ بیک حاصل کیا جا سکتا ہے۔ صوبائی وزیر نے محکمہ لائیوسٹاک کی خدمات کو سرا ہتے ہوئے کہا کہ 8000سے زائد محکمانہ فیلڈ سٹاف 9 ملین رجسٹرڈ فارمرز کو 434 مختلف قسم کی خدمات فراہم کر رہے ہیں جن میں علاج معالجہ ، ویکسی نیشن ، تشخیص اور مصنوعی نسل کشی جیسے اہم امور شامل ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ سسٹم ہر لحاظ سے صارف دوست بنایا گیا ہے جس سے اسے بغیر انٹرنیٹ کسی بھی موبائل فون پر ملک کے تمام نیٹ ورکس سے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ صوبائی وزیر انفارمشین ٹیکنالوجی راجہ یاسر ہمایوں نے محکمہ لائیوسٹاک میں ورچوئل گورننس سسٹم کے استعمال کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے پنجاب انفارمشین ٹیکنالوجی بورڈ کے مکمل تعاون کی یقین دہانی کروائی۔ تقریب میں سیکرٹری لائیوسٹاک اسد رحمان گیلانی اور چیئرمین پی آئی ٹی بی اظفر رحمان سمیت ایڈیشنل سیکرٹریز، ڈائریکٹر جنرلز اور ڈائریکٹرز نے بھی شرکت کی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے