کرسپر ٹیکنالوجی سے تبدیل شدہ دنیا کا پہلا گنّا تیار

کرسپر ٹیکنالوجی کی بدولت گنّے کی ایک قسم تیارکی گئی ہے جو قدرے ماحول دوست بھی ہے

فلوریڈا(نیٹ نیوز)یونیورسٹی آف فلوریڈا کے شعبہ جینیات نے کچھ مخصوص جین تلاش کئے جو گنّے کے پودے کے ظاہری خدوخال تبدیل کرسکتے ہیں۔پہلے مرحلے میں تو سائنسدانوں نے گنّے میں ان جین کا سوئچ آف کردیا جو میگنیشیئم چیلیٹیز بنارہے تھے جو ایک اینزائم ہے جس کی مدد سے پودا کلوروفِل بناتا ہے ۔ اب اس کی کمی سے پودا رنگت کھوگیا اور اس کے پتے ہلکے سبز اور پیلے ہونے لگے ۔ ایک اور مطالعے میں کرسپر استعمال کرتے ہوئے انفرادی نیوکلوٹائیڈز متعارف کرائے گئے تو اس سے وہ ضارکش دواؤں کا بہتر مقابلہ کرنے لگے اور یوں ان پر کم دوا چھڑکنے کی ضرورت پیش آئی۔ان دو کامیابیوں سے دنیا بھر کے کھیتوں میں ایسے گنّے افزائش ہوسکیں گے جوکئی ماحولیاتی مسائل کو کم کریں گے اور ان کے معیاروپیداور پر کوئی منفی اثر نہ ہوگا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے